امریکا نے پابندیاں لگائیں تو پاکستان چین اور روس سے اسلحہ خریدنے پر مجبور ہو گا

پاکستان پر امریکی پابندیوں کے اچھے نتائج نہیں نکلیں گے، پاکستان پر پابندیوں دہشتگردی کے خلاف جنگ متاثر ہو گی، امریکا کو دہشتگردی کے خلاف جنگ میں پاکستان کی قربانیوں اور کاوشوں کو قبول کرنا ہو گا، افغانستان میں خراب حالات کا ذمہ دار پاکستان نہیں ، افغان سرزمین سے پاکستان پر حملے ہوتے ہیں، افغانستان سے دہشتگرد پاکستان آتے ہیں جس کی وجہ سے پاک افغان بارڈر پر بار لگانی پڑ رہی ہے، غیر ملکی خبر رساں ادارے کو وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی جانب سے دیا گیا انٹرویو

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔ منگل ستمبر ء) وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ پاکستان پر امریکی پابندیوں کے اچھے نتائج نہیں نکلیں گے ، پاکستان پر پابندیوں دہشتگردی کے خلاف جنگ متاثر ہو گی ، اگر امریکا نے پاکستان پر پابندیاں لگائیں تو پاکستان چین اور روس سے اسلحہ خریدنے پر مجبور ہو گا ، امریکا کو دہشتگردی کے خلاف جنگ میں پاکستان کی قربانیوں اور کاوشوں کو قبول کرنا ہو گا، افغانستان میں خراب حالات کا ذمہ دار پاکستان نہیں ، افغان سرزمین سے پاکستان پر حملے ہوتے ہیں اور افغانستان سے دہشتگرد پاکستان آتے ہیں جس کی وجہ سے پاک افغان بارڈر پر بار لگانی پڑ رہی ہے ۔

پیر کے روز غیر ملکی خبر رساں ادارے کو انٹر ویو دیتے ہوئے وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ افغانستان سے دہشتگرد پاکستان آ کر حملے کرتے ہیں ، افغان سر زمین سے دہشتگردوں نے پاکستان کی مسلح افواج اور شہریوں پر حملے کرتے ہیں جس کی وجہ سے پاکستان کو افغانستان سے منسلک اڑھائی ہزار کلومیٹر علاقے پر باڑ لگانا پڑی ، باڑ لگانے پر اربوں ڈالرز کا خرچہ آ رہا ہے جو پاکستان خود برداشت کر رہا ہے ، افغانستان میں ہر خرابی کا الزام پاکستان پر نہیں لگایا جا سکتا۔

وزیر اعظم نے کہا کہ لاکھ افغان مہاجرین کو پاکستان نے پنا ہ دی ، امریکا کو اس بھی اعتراف کرنا چاہئیے ، دہشتگردی کے خلاف جنگ میں پاکستان کا جو نقصان ہوا اس کا بھی اعتراف کرنا چاہئیے ، پاکستان کی تضحیک سے امریکی بھی متاثر ہوں گے ۔ انہوں نے کہا کہ 1960سے پاکستان کے چین سے دفاعی اور معاشی تعلقات ہیں، امریکا کے بعد پاکستان کو دفاعی اقدامات کے دیگر آپشنز پر غور کرنا ہو گا ، کستان پر معاشی اور عسکری پابندیوں سے دہشتگردی کے خلاف جنگ پر اثر پڑے گا،پابندیوں سے دونوں ملک انتہا پسندی و دہشتگردی کے خلاف جنگ میں متاثر ہوں گے ،امریکا کو پاکستان میں دہشتگردی سے نقصان کا اعتراف کرنا چاہئیے ،دہشتگردی کے خلاف مل جل کر کام کرنے کی ضرورت ہے ، اگر امریکا نے پاکستان پر پابندی لگائی تو پاکستان چین اور روس سے اسلحہ خریدنے پر مجبور ہو گا۔

ایک سوال کے جواب میں وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ سابق وزیر اعظم نواز شریف 28 جولائی کے فیصلے کے بعد زیادہ طاقتور لیڈر بن گئے ہیں ۔

گوگل + وٹس ایپ پر شئیر کریں