تحریک انصاف نے عام انتخابات 2018کیلئے تیاریوں کا باضابطہ آغاز کر دیا،پارٹی ٹکٹ کے درخواستیں طلب

, تحریک انصاف کی آفیشل ویب سائٹ پر درخواست فارم دستیاب ہوں گے،قومی اسمبلی کیلئے خواہشمند امیدوار ایک لاکھ جبکہ صوبائی اسمبلیوں کے امیدوار درخواست فارم کے ساتھ 50 ہزار روپے بطور زر ضمانت جمع کروائیں گے , امیدواروں کی درخواستوں پر پی ٹی آئی چیئرمین کی زیر صدارت پارلیمانی بورڈز 14 سے 25اپریل تک غور کریگا , الیکشن ٹکٹوں کے فیصلے پارلیمانی بورڈ کے ذریعے خود کروں گا ، اس مرتبہ پارٹی کاکوئی ٹکٹ فروخت نہیں کرسکے گا، مضبوط امیدواروں کو میدان میں اتار جائے گا، پی ٹی آئی سب سے زیادہ انتخابی حلقوں میں امیدوار کھڑے کریگی، پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 02 اپریل2018ء) پاکستان تحریک انصاف نے عام انتخابات 2018کیلئے تیاریوں کا باضابطہ آغاز کر دیا ہے،پی ٹی آئی نے پارٹی ٹکٹ کے درخواستیں طلب کر لی ہیں،،تحریک انصاف کی آفیشل ویب سائٹ پر درخواست فارم دستیاب ہوں گے،،قومی اسمبلی کیلئے خواہشمند امیدوار ایک لاکھ جبکہ صوبائی اسمبلیوں کے امیدوار درخواست فارم کے ساتھ پچاس ہزار روپے بطور زر ضمانت جمع کروائیں گے، امیدوراوں کا انتخاب دیانت، پارٹی سے وفاداری ، انتخاب لڑنے کی قابلیت اور منتخب ہونے کی صلاحیت کو سامنے رکھ کر کیا جائیگا،امیدواروں کی درخواستوں پر پی ٹی آئی چیئرمین کی زیر صدارت پارلیمانی بورڈز 14 سے 25اپریل تک غور کریگا۔

پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان کا کہنا ہے کہ الیکشن ٹکٹوں کے فیصلے پارلیمانی بورڈ کے ذریعے خود کروں گا ، اس مرتبہ پارٹی کاکوئی ٹکٹ فروخت نہیں کرسکے گا، مضبوط امیدواروں کو میدان میں اتار جائے گا، پی ٹی آئی سب سے زیادہ انتخابی حلقوں میں امیدوار کھڑے کرے گی۔پیر کو تحریک انصاف کے پارلیمانی بورڈ کا اہم اجلاس چیئرمین عمران خان کی زیر صدارت ہوا،اجلاس میں پارلیمانی بورڈز کے مستقل ممبر شاہ محمود قریشی، جہانگیر ترین، اسد عمر سمیتملک بھر سے پارلیمانی بورڈ کے اراکین شریک ہوئے۔

ترجمان پی ٹی آئی کے مطابق اجلاس میںمقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی بربریت کی شدید الفاظ میں مذمت اوراہل کشمیر کی حق خودارادیت کیلئے جاری جدوجہد کی مکمل حمایت کا اعادہ کیا گیا ،اجلاس میںاقوام متحدہ کی سلامتی کونسل سے فوری مداخلت اور بھارت کے خلاف عملی اقدامات کا مطالبہ کیا گیا۔پی ٹی آئی کے مرکزی ترجمان فواد چوہدری کے مطابق پارلیمانی بورڈ ز کے اجلاس میں آئندہ انتخابات کیلئے امیدواروں کے انتخاب کا عمل فوری شروع کرنے کا فیصلہ کیا گیا،ملکی تاریخ میں پہلی مرتبہ آن لائین درخواستیں طلب کرنے اور کوائف مرتب کرنے کا فیصلہ ہوا،،تحریک انصاف کی آفیشل ویب سائٹ پر درخواست فارم دستیاب ہوں گے۔

فواد چوہدری کے مطابق قومی اسمبلی کیلئے خواہشمند امیدوار ایک لاکھ روپے بطور زر ضمانت درخواست کے ساتھ جمع کروانے کے پابند ہونگے،صوبائی اسمبلیوں کے امیدوار درخواست فارم کے ساتھ پچاس ہزار روپے بطور زر ضمانت جمع کروائیں گے۔اجلاس میں حتمی امیدواروں کے انتخاب کے طریقہ کار پر مفصل تبادلہ خیال کیا گیا،،تحریک انصاف کے الیکشن مینجمنٹ سیل کی جانب سے طریقہ کار اور انتخاب کے مراحل پر مفصل بریفنگ دی گئی۔

ترجمان فواد چوہدری کے مطابق پنجاب اور اسلام آباد کے امیدواروں کی درخواستوں پر غور کیلئے پارلیمانی بورڈز کا اجلاس بالترتیب 14اور 15اپریل کو منعقد کیے جائینگے،پختونخوا اور فاٹا کے امیدواروں کی درخواستوں پرغور 17اور 18اپریل کے اجلاس میں کیا جائیگا،سندھ سے موصول ہونے والی درخواستیں 20اپریل کے اجلاس میں زیر غور آئیں گی، بلوچستان سے موصول شدہ درخواستوں پر 25اپریل کو غور کیا جائیگا،پارلیمانی بورڈز طے شدہ کسوٹی پر امیدواروں کو پرکھیں گے اور حتمی سفارشات مرتب کرینگے،پارلیمانی بورڈز کی جانب سے شارٹ لسٹڈ امیدواروں کی فہرست کی حتمی منظوری چیئرمین تحریک انصاف دیں گے ،پارلیمانی بورڈز کے تمام اجلاسوں کی صدارت چیئرمین عمران خان خود کرینگے،پارلیمانی بورڈز امیدوراوں کی دیانت، پارٹی سے وفاداری ، انتخاب لڑنے کی قابلیت اور منتخب ہونے کی صلاحیت کو ملحوظ خاطر رکھتے ہوئے فیصلے کرینگے ۔

دوسری جانب عمران خان نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ الیکشن ٹکٹوں کے فیصلے پارلیمانی بورڈ کے ذریعے خود کروں گا اور اس مرتبہ پارٹی کاکوئی ٹکٹ فروخت نہیں کرسکے گا۔چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ کوئی خاص کوٹہ نہیں ہوگا، مضبوط امیدواروں کو میدان میں اتار جائے گا، پی ٹی آئی سب سے زیادہ انتخابی حلقوں میں امیدوار کھڑے کرے گی۔

گوگل + وٹس ایپ پر شئیر کریں